زبان: اردو
03 Myths.png

مفروضے

حقیقت

کوروناوائرس ماحول سے بالاتر ہو کر منتقل ہو سکتا ہے۔ روک تھام کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ صابن اور پانی یا الکوحل کی مصنوعات سے اکثر ہاتھ دھوئے جائیں۔

حقیقت

بچوں سمیت علامات ظاہر نہ کرنے والے افراد وائرس منتقل کر سکتے ہیں۔ اس وجہ سے رابطہ گھٹانا اور اکثر ہاتھ دھونا ضروری ہے۔

حقیقت

ابھی تک ایسی کوئی معلومات یا ثبوٹ موجود نہیں ہے جو ظاہر کرے کہ مچھر نیا کوروناوائرس منتقل کر سکتے ہیں۔

حقیقت

اینٹی بائیوٹکس وائرسز کے خلاف نہیں، بلکہ صرف بیکٹریا کے خلاف دفاع کرتی ہیں۔ علامات گھٹانے کے لئے مختلف علاج استعمال کیے جاتے ہیں۔

حقیقت

ہر کسی کو وائرس لگ سکتا ہے۔ بزرگ اور پہلے سے بیماریوں (مثلاً ذیابیطس، ہاپرٹینشن، دل کے امراض) میں مبتلا افراد کو زیادہ خطرہ لاحق ہے

حقیقت

اگرچہ کووڈ-19 کے ابتدائی کیسز چین میں سامنے آئے تھے، لیکن یہ مرض کسی ایک گروہ یا مقام تک محدود نہیں ہے۔ یہ وائرس جغرافیائی حدود، نسلوں، عمر، اہلیت یا جنس کی تفریق نہیں کرتا۔

حقیقت

آپ سماجی فاصلے پر عمل کر کے، صابن اور پانی سے اکثر ہاتھ دھو کر، اپنے منہ کو نہ چھو کر، کہنی موڑ کر اس میں کھانسنے اور/یا چھینکنے سے اور ہر ممکن حد تک گھر پر رہ کر مرض کا پھیلاؤ روکنے میں مدد کر سکتے ہیں۔

اس مضمون میں شامل کرنے کے لئے کچھ ہے؟

اس مضمون پر تبصرہ فی الحال غیر فعال ہے
The Internet of Good Things