زبان: اردو

ہر بچے کو یہ حق حاصل ہے کہ اس کانام رکھاجائے اور شہریت دی جائے۔ بچے کی پیدائش کا اندراج کروانے سے بچے کے لئے تعلیم،حفظان صحت اور قانونی اورسماجی خدمات کویقینی بنانے میں مددملتی ہے۔ پیدائش کا اندراج ب

ہر بچے کو یہ حق حاصل ہے کہ اس کا نام رکھا جائے اور شہریت دی جائے۔ بچے کی پیدائش کا اندراج کروانے سے بچے کے لئے تعلیم،حفظان صحت اور قانونی اورسماجی خدمات کویقینی بنانے میں مددملتی ہے۔ پیدائش کا اندراج بچوں کو بدسلوکی اور استحصال سے تحفظ فراہم کرنے کی جانب ایک اہم قدم ہے۔

پیدائش کا اندراج بچے کی موجودگی اور شہریت کا ایک سرکاری ریکارڈ فراہم کرتا ہے۔ اسے ایک بنیادی انسانی حق تصور کیا جاتا ہے۔ پیدائشی سرٹیفیکٹ کے بغیر کسی بھی بچے کو حفظان صحت، قانونی خدمات، اسکول میں داخلے اور بالغ ہونے پر ووٹ کا حق استعمال کرنے سے انکار کیا جا سکتا ہے۔

بچے کی پیدائش کا اندراج اس بچی (یا بچے) کے تحفظ کی جانب ایک اہم قدم ہوتاہے۔ پیدائشی سرٹیفیکٹ رکھنے والے 5سال سے کم عمرکے بچوں کے لئے اس بات کے زیادہ امکانات ہوتے ہیں کہ انہیں حفاظتی ٹیکوں اور بچپن کی بیماریوں کے لئے حفظان صحت کی سہولتیں حاصل ہوں، جو ان کی زندگی کے ایک صحت مندآغاز کو یقینی بنا سکتی ہیں۔

کم سے کم عمر کے بارے میں کسی بھی قانون سازی کے نفاذ کا انحصاربچے کی عمر کے سرکاری ریکارڈ پر ہوتا ہے۔ مثال کے طور پر، پیدائش کے سرٹیفیکٹ کو کسی بچے کی مسلح افواج یا مسلح گروپس کی غیر قانونی بھرتی، بچپن میں شادی یا کام کی نقصان دہ اشکال سے محفوظ رکھنے کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

ہر بچے کے لئے پیدائش کے اندراج تک رسائی بلا معاوضہ ہونی چاہئیے۔ جہاں یہ سہولت بلا معاوضہ فراہم نہیں کی جاتی،وہاں شہری معاشرے کی تنظیمیں کبھی کبھاربچوں کی رجسٹریشن میں خاندان والوں کی مددکرسکتی ہیں۔

پیدائش کے اندراج کا عمل سماجی خدمات،جیسا کہ حفظان صحت اور تعلیم کی سہولتوں کے حصول میں مدد دے سکتاہے۔ کچھ جگہوں پر قائم مراکز صحت اور اسپتالوں میں سول رجسٹرار موجود ہوتے ہیں جو پیدائش پر یا حفظان صحت کے لئے لائے جانے والوں بچوں کو پیدائش کے سرٹیفیکٹ جاری کر سکتے ہیں۔ بعض اوقات یہ رجسٹریشن ابتدائی بچپن کے تعلیمی پروگرام کے آغازپر عمل میں آتی ہے۔

The Internet of Good Things