زبان: اردو

1. شیر خوار اور چھوٹے بچوں سمیت تمام لوگوں کے فضلے کو محفوظ طریقے سے ٹھکانے لگانا چاہئیے۔ اس بات کو یقینی بنانا کہ خاندان کے تمام ارکان ٹائیلٹ، لیٹرین یا پوٹی (چھوٹے بچوں کے لئے) استعمال کررہے ہیں جو

شیر خوار اور چھوٹے بچوں سمیت تمام لوگوں کے فضلے کو محفوظ طریقے سے ٹھکانے لگانا چاہئیے۔ اس بات کو یقینی بنانا کہ خاندان کے تمام ارکان ٹائیلٹ، لیٹرین یا پوٹی (چھوٹے بچوں کے لئے) استعمال کررہے ہیں جو فضلے کو ٹھکانے لگانے کابہترین طریقہ ہے۔ جہاں کہیں ٹائیلٹ موجود نہ ہو، تو وہاں فضلے کو مٹی میں دبادینا چاہئیے۔

بہت سے امراض، خصوصاً دستوں کی بیماری، ان جراثیموں سے پیدا ہوتی ہیں جو انسانی فضلے میں پائے جاتے ہیں۔ اگر یہ جراثیم پانی میں شامل ہو جائیں یا کھانے پینے کی چیزوں ، ہاتھوں ، برتنوں یا کھانا تیار کرنے کی جگہوں اور کھانا کھلانے کی جگہوں پر آجائیں تو یہ منہ میں جا سکتے ہیں اور بیماری کی وجہ بن سکتے ہیں۔ تمام فضلوں - انسانی اور جانوروں دونوں کے - کو محفوظ طریقے سے ٹھکانے لگانا ہی لوگوں یا مکھیوں کی جانب سے ان جراثیموں کے پھیلاؤ کو روکنے کا واحد اہم عمل ہے۔ انسانی فضلے کو ٹائیلٹ یا لیٹرین میں ٹھکانے لگانے یا مٹی میں دبانے کی ضرورت ہے۔

شیر خوار اور چھوٹے بچوں سمیت تمام لوگوں کے فضلے میں جراثیم ہوتے ہیں جو خطرناک ہوتے ہیں۔ اگر بچے ٹائیلٹ یا لیٹرین کے بغیر پاخانہ کرتے ہیں تو ان کے فضلے کو فوری طور پر صاف کرنا اور ٹائیلٹ میں فلش کردینا یا لیٹرین میں ٹھکانے لگادینا یا مٹی میں دبا دینا چاہئیے۔ پھر والدین یا دیکھ بھال کرنے والے دیگر افراد اور بچوں کے ہاتھوں کو صابن اور پانی یا کسی متبادل، جیسا کہ راکھ اور پانی، سے دھولینا چاہئیے۔

اگر ٹائیلٹ یا لیٹرین کا استعمال ممکن نہ ہو ، تو گھر کے تمام افراد کو گھروں ، پگڈنڈیوں ، پانی کے کنوؤں اور نلکوں اور ان جگہوں سے دور رفع حاجت کے لئے جانا چاہئیے جہاں بچے کھیلتے ہیں۔ پھر فضلے کو فوری طور پر مٹی میں دبا دینا چاہئیے۔ جانوروں کے فضلے کو بھی گھروں ، پگڈنڈیوں اور ان جگہوں سے دور رکھنا چاہئیے جہاں بچے کھیلتے ہیں۔

لیٹرینز اور ٹائیلٹس کو باربار صاف کرنے کی ضرورت ہے۔ لیٹرینز کو ڈھانپ کر رکھنا چاہئیے اور ٹائیلٹس کو فلش کرتے رہنا چاہئیے۔ ایک صاف ستھری لیٹرین صرف چندمکھیوں کو راغب کرتی ہے۔ لوگ ایک صاف ستھری لیٹرین استعمال کرنا زیادہ پسند کرتے ہیں۔ مقامی حکام اور غیر سرکاری تنظیمیں گھروالوں اور کمیونٹیوں کو اکثر یہ مشورہ دے سکتی ہیں کہ ایک کم لاگت والی صاف ستھری لیٹرین کا ڈیزائن کیسا ہونا چاہئیے اور اس کے تعمیر کے لئے کن کن چیزوں کی ضرورت ہو سکتی ہے۔

شہری علاقوں میں بھی حکومت اور کمیونٹیوں کو یہ طے کرنے کے لئے مل کر کام کرنا چاہئیے کہ کم لاگت کی لیٹرینز یا ٹائیلٹس، صفائی اور نکاسی آب کے نظاموں ، پینے کے صاف پانی کی فراہمی اور کوڑا جمع کرنے کی سہولتیں کس طرح فراہم کی جاسکتی ہیں۔

The Internet of Good Things