زبان: اردو

ملیریا کچھ مچھروں کے کاٹنے سے منتقل ہوتا ہے۔ مچھر کے کاٹنے سے محفوظ رہنے کے لئے مچھرمار دوا چھڑکی ہوئی مچھر دانی میں سونا اس کی روک تھام کا بہترین ذریعہ ہے۔

ملیریا کچھ مچھروں کے کاٹنے سے منتقل ہوتا ہے۔ مچھر کے کاٹنے سے محفوظ رہنے کے لئے مچھرمار دوا چھڑکی ہوئی مچھر دانی میں سونا اس کی روک تھام کا بہترین ذریعہ ہے۔

کمیونٹی کے تمام ارکان، خصوصاً چھوٹے بچوں اور حاملہ عورتوں کو مچھر کے کاٹنے سے تحفظ حاصل ہونا چاہئیے۔ اس تحفظ کی ضرورت سورج غروب ہونے کے بعد اور طلوع ہونے سے پہلے ہوتیہے، جب ملیریا کے مچھر کاٹ سکتے ہیں۔

مچھرماردوا چھڑکی ہوئی دیر پامچھردانیوں پرکم از کم تین سال تک دوبارہ مچھر مار دواچھڑکنے کی ضرورت نہیں ہوتی۔ یہ مچھر دانیاں ملیریا کنٹرول پروگراموں کے تحت تقسیم کی جاتی ہیں اور مراکز صحت کے ذریعے یا بچوں کی صحت کے دن یا مشترکہ مہموں کے دوران حاصل کی جا سکتی ہیں۔ یہ مچھردانیاں، خصوصاً حاملہ عورتوں اور چھوٹے بچوں کو مفت تقسیم کی جاتی ہیں۔ شہری علاقوں میں انہیں بازار سے بھی خریدا جا سکتا ہے یا سماجی مارکیٹنگ پروگراموں کے تحت بھی حاصل کیا جا سکتا ہے۔ کچھ علاقوں میں جہاں دوا چھڑکے بغیر مچھر دانیاں استعمال کی جارہی ہوں،وہاں تربیت یافتہ کارکنان صحت محفوظ مچھرمار دوا ان مچھردانیوں پر چھڑکنے کا مشورہ دے سکتے ہیں۔

مچھر مار دوا چھڑکی ہوئی مچھردانیاں پورے سال استعمال کی جانی چاہئیں، یہاں تک کہ خشک موسم کے دوران بھی جب بہت کم مچھر پائے جاتے ہیں۔

کچھ ممالک میں کچھ پروگراموں کے تحت گھر کی دیواروں پر دیرپا مچھر مار دواچھڑکی جاتی ہے تاکہ گھر میں موجود مچھروں کو مار دیا جائے۔ اس بات کو یقینی بنانے کے لئے تمام گھروں میں یہ دوا چھڑک دی گئی ہے، کمیونٹیوں کو سپرے ٹیموں کے ساتھ تعاون کرنا چاہئیے۔

مچھر مار دوا چھڑکی ہوئی مچھردانیاں استعمال کرنے کے علاوہ، یا اگر مچھر دانیاں دستیاب نہیں یا استعمال نہیں کی جا رہیں، تو ایسی صورت حال میں دیگر اقدام سے مدد حاصل کی جا سکتی ہے، لیکن یہ اقدام اتنے زیادہ موثرنہیں ہوں گے جتنا کہ مچھردانیاں ہو سکتی ہیں:

• دروازوں اور کھڑکیوں پر پردے ڈالتے ہوئے؛ یہ زیادہ تر شہری علاقوں میں استعمال کئے جاتے ہیں اور روائیتی دیہی گھروں میں زیادہ موثر نہیں ہوتے۔ • مچھر مارکوائیل استعمال کرتے ہوئے؛ یہ مچھروں کو بھگانے کے لئے استعمال ہوتے ہیں،مارنے کے لئے نہیں - یہ زیادہ دیر تک موثر نہیں ہوتے۔ • ایسے کپڑے پہنتے ہوئے جو ہاتھوں اور ٹانگوں کو ڈھک دیں (لمبی آستین والی قمیضیں اور لمبے پاجامے یا اسکرٹس)؛ یہ مچھر کے کاٹنے کے واقعات کو کم کرنے میں مدد دے سکتے ہیں اگر اس وقت پہنے جائیں جب مچھر سب سے زیادہ سرگرم ہوتے ہیں - سورج غروب ہونے کے بعد سے سورج طلوع ہونے تک۔

The Internet of Good Things