زبان: اردو

6 سے 8 ماہ کی عمر کے دوران بچے کو دو سے تین بار اور ۹ ماہ کی عمر میں چار بار کھانے ضرورت ہوتی ہے۔

6 سے 8 ماہ کی عمر کے دوران بچے کو دو سے تین بار اور ۹ ماہ کی عمر میں چار بار کھانے ضرورت ہوتی ہے۔

پہلے دو سالوں میں بچوں کو اچھی غذا دینا بہت اہم ہے۔

بچے کا معدہ بڑوں کی نسبت چھوٹا ہوتا ہے لہٰذا ایک بچہ ایک وقت کے کھانے میں زیادہ نہیں کھا سکتا۔ یہ بات اہم ہے کہ بچوں کی تمام ضروریات کو پورا کرنے کے لئے ان کو باربار کھانے کے لئے دیا جائے۔

نیچے یہ معلومات فراہم کی گئی ہیں کہ ایک چھوٹے بچے کو کتنا اکثر اور کتنی مقدار میں فیڈ کرانا چاہیے:

بچے کو بار بار ماں کا دودھ پلانا اور ایک دن میں دو سے تین مرتبہ کھانے کے لئے کچھ دینا چاہیے۔ والدین کو چاہیے کہ وہ نرم یا پتلی کھانے کی چیزوں(جیسا کہ دلیہ) سے آغاز کریں اور آہستہ آہستہ اس کی خوراک کے گاڑھے پن میں اضافہ کرتے جائیں۔ ہر فیڈ پر دو یا تین چمچ سے آغاز کریں، اور اسے بڑھاتے ہوئے 125 ملی لیٹر تک لے جائیں۔

بچوں کو ماں کا دودھ پلانے کے علاوہ ایک دن میںتین سے چار مرتبہ کھانے کی دیگر چیزیں دینی چاہیئں۔ 11-9ماہ کے شیر خوار بچوں کو فی فیڈنگ 250ملی لیٹر والی پیالی کا نصف دیں۔ 23-12ماہ کے شیر خوار بچوں کو فی فیڈنگ 250ملی لیٹر والی پیالی کا تین چوتھائی سے لے کر پوری ایک پیالی فراہم کریں۔ دوسال یا اس سے بڑی عمر کے بچوں کو فی فیڈنگ 250ملی لیٹر والی کم از کم پوری ایک پیالی دیں۔ جہاں تک ممکن ہو سکے،جانوروں سے حاصل ہونے والی کھانے کی چیزوں جیسا کہ، گوشت، مچھلی، انڈے زیادہ سے زیادہ مقدار میں شامل کریں۔

The Internet of Good Things